کراچی سے مدینہ جانے والی پی آئی اے کی پرواز حادثے سے بچ گئی، اڑان بھرنے کے کچھ ہی دیر بعد انجن سے چنگاری نکلنا شروع ہوگئی، کاک پٹ میں فائر الارم کی وارننگ کے بعد طیارے کا ایک انجن بند ہوگیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق طیارے کے پائلٹ نے فائر بوتل سے انجن میں آگ پر قابو پانےکی کوشش کی جس کے بعد کپتان نے اے ٹی سی سے رابطہ ایمرجنسی لینڈنگ کی اجازت طلب کی۔

ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ کپتان نے طیارے کو کراچی ایئرپورٹ پر بحفاظت اتار ا، طیارے میں 276 مسافر سوار تھے، طیارے کی لینڈنگ ہونے کے بعد سول ایوی ایشن اتھارٹی کی ٹیم پہنچ گئی۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ کپتان اور فرسٹ آفیسر کے الکوحل، خون اور یورین کے ٹیسٹ کیے گئے، جہاز کے ایک انجن میں فائر وارننگ آئی تھی، طیارے کو واپس کراچی ایئرپورٹ پر تارا گیا ہے۔

ترجمان کا بتانا ہے کہ پی آئی اے کے انجینئر انجن کا معائنہ کر رہے ہیں، جہاز کے انجن میں آگ لگنے کے شواہد نہیں ملے، پروسیجر کے تحت ایک انجن پر جہاز کو اتارا گیا۔

Written By ویب ڈیسک

ٹائمز آف کراچی کے ویب ڈیسک ذریعے مختلف موضوعات پر خبریں شائع کی جاتی ہیں۔ جو سیاست، معاشرے، ثقافت اور تفریح ​​سمیت متعدد موضوعات کا احاطہ کرتی ہے۔