کراچی کے سب سے بڑے سرکاری اسپتال کی ایمرجنسی میں 2 نامعلوم افراد 8 سالہ لڑکے کی لاش چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ جناح اسپتال میں پیش آئے اس واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹج بھی سامنے آگئی ہے۔

جناح اسپتال کی ایمرجنسی میں 2 افراد اسٹریچر پر لڑکے کی لاش لے کر آئے، ایک نے سفید شلوار قمیض اور دوسرے نے سبز شرٹ اور جینز پہنی رکھی تھی، دونوں افراد بچے کی لاش چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

جیو نیوز کے مطابق جناح اسپتال کے ترجمان نے بتایا ہے کہ 2 نامعلوم افراد جناح اسپتال کی ایمرجنسی میں 8 سال کے لڑکے کی لاش چھوڑگئے، بچے کو مردہ حالت میں اسپتال لایا گیا تھا اور بچے کا روڈ ایکسیڈنٹ ہوا تھا۔

ترجمان کے مطابق لڑکے کو لانے والے افراد کو ایمرجنسی کی پرچی بنوانے کا کہا گیا تو وہ  فرار ہوگئے، اسپتال انتظامیہ سی سی ٹی وی کو پولیس کے حوالے کرے گی۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ کار جس شخص کے نام پر ہے اس کا پتا لگا لیا گیا ہے اور کار کے مالک سے رابطہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ جاں بحق لڑکے کی شناخت 8 سالہ راول فیاض کے نام سےہوئی جو قیوم آباد کا رہائشی ہے اور صبح سے لاپتا تھا۔

ڈی آئی جی ساؤتھ نے واقعے کا نوٹس لے کر متعلقہ ایس ایچ او کو تحقیقات کا حکم دیدیا۔

Written By ویب ڈیسک

ٹائمز آف کراچی کے ویب ڈیسک ذریعے مختلف موضوعات پر خبریں شائع کی جاتی ہیں۔ جو سیاست، معاشرے، ثقافت اور تفریح ​​سمیت متعدد موضوعات کا احاطہ کرتی ہے۔